• image01

    وفی انفسکم افلا تبصرون (51:21)

    اورمیں خود تمہارے نفوس میں ہوں
    تو کیا تم دیکھتے نہیں؟

  • image02

    ففروا الی اللہ (51:50)

    دوڈو اللہ کی طرف

  • image03

    الفقرو فخری والفقر و منی - الحدیث

    فقر میرا فخر ہے
    اور فقر مجھ سے ہے

سالانہ پروگرام

دنیا کی مختلف کمیونیٹیز اور ان کے افکار سے وابستہ لوگ اپنے اپنے مراکز میں مختلف اجتماعات کا اھتمام کرتے چلے آرھے ھیں جس میں اس فکر سے وابستہ لوگوں کی کثیر تعداد شرکت کرتی ھے ۔ ایسے اجتماعات میں اس کمیونٹی کے افکار کی حقانیت کو واضح کیا جاتا ھے اور افکار کے مختلف پہلؤں کا تجزیہ کیا جاتا ھے اور آئندہ کے لائحۂ عمل پر غور کیا جاتا ھے اور وابستہ لوگوں سے اس فکر کے اغراض و مقاصد کی تکمیل کا تجدیدِ عھد لیا جاتا ھے ۔

اِسی روایت کے پیشِ نظر تقریباً تمام صوفیائے اسلام اور اکابرین کی زندگی کے مختلف گوشوں سے جڑے ایام کی یاد میں تقریب منعقد کی جاتی ھے جسے عرس اور دیگر ناموں سے موسوم کیا جاتا ھے ۔ گزشتہ دو صدیوں کے اس زوال جو کہ امتِ مسلمہ میں بپا ھوا ھے کے نتیجے میں اس طرح کی تقریبات زیادہ تر رسوم و رواج کی زنجیروں میں پھنس کر رہ گئی تھیں اور اکابرین اسلام سے منسوب محافل و مجالس انسانیت کے امن و محبت و استحکام کے پیغام کی بجائے میلے ٹھیلے بن کر رہ گئ تھیں لیکن اصلاحی جماعت و عالمی تنظیم العارفین کے بانی سلطان الفقر حضرت سلطان محمد اصغر علی رحمۃ اللہ علیہ نے اپنے انقلابی افکار کے تحت اعراس کی تقریبات کو رسوم و رواج کے چنگل سے آزاد کر کے خالصتاً اکابر کے پیغام ، تحریک اور اغراض و مقاصد سے تجدیدِ عھد کی تقریب کے طور پر منعقد کرنے کی سعی کی اور اس فکر کا پرچار کیا کہ اگر اس طرح کی تقریبات سے دعوتِ عمل اور عملِ احسن مفقود ہو جائے تو یقینی طور پر اللہ سبحانہٗ وتعالیٰ کی رحمت اور کرم کا سایہ بھی وھاں سے اٹھ جاتا ھے ۔

اصلاحی جماعت و عالمی تنظیم العارفین کے زیرِ اھتمام اکابرینِ اسلام کے پیغام سے تجدیدِ عھد اور اُن کی صدیوں پر محیط امنِ عالم اور استحکامِ انسانیت کی جد و جھد سے تجدیدِ عھد کے لئے مرکزی سطح پر سال میں متعدد تقریبات کا اھتمام کیا جاتا ھے ۔ جن میں دنیا بھر سے لاکھوں کی تعداد میں عامۃ الناس شرکت کرتے ھیں ۔

میلاد مصطفی ﷺ پروگرام 2012 کی سالانہ رپورٹس دیکھیں